vni.global
Viral News International

سکھ رہنما ہردیپ سنگھ نجر کا قتل ،کینیڈا کے وزیراعظم نے بھارت کے ہاتھ ہونے کی تصدیق کردی

وزیراعظم کینیڈا جسٹن ٹروڈو کا بڑا فیصلہ۔ کینیڈا کے وزیراعظم جسٹن ٹروڈونے سکھ رہنما ہردیپ سنگھ نجر کے قتل کے پیچھے بھارت کا ہاتھ ہونے کی تصدیق کردی

،، کینیڈا کی وزیرخارجہ میلانی جولی نے بھارتی انٹیلی جنس “را” کے سربراہ کو ملک سے نکل جانے کا حکم دیدیا ،، خالصتان کے حامی سکھ رہنما ہردیپ سنگھ نجر کو کینیڈا میں گوردوارے کے سامنے 18 جون کو گولیاں مار کر ہلاک کیا گیا تھا ،، جسٹن ٹروڈو نے کہا کہ کینیڈا کی انٹیلیجنس نے ہر دیپ سنگھ نجر کی موت اور بھارتی حکومت کے درمیان تعلق کی نشاندہی کی ہے

ہردیپ سنگھ کے قتل کے خلاف سکھوں نے لندن اور کینیڈا سمیت دنیا بھر میں مظاہرے بھی کئے خالصتان ریفرنڈم میں شرکا نے بھارتی سفارت کاروں پر ہردیپ سنگھ نجر کے قتل کا الزام لگایا وینکوور میں 10 ستمبر کو ہونے والے ریفرنڈم میں ایک لاکھ 30 ہزار سے زائد سکھوں نے حصہ لیا سنگھ کے مبینہ قتل میں ملوث بھارتی سفارت کاروں کی تصاویر والے بینر اور پوسٹر بھی لگائے گئے

ہردیپ سنگھ نجر کے قتل میں بھارتی سفارت کار ملوث ہیں,ہردیپ سنگھ نجر کینیڈا میں سکھ فار جسٹس خالصتان کے رہنما تھےہردیپ سنگھ نجر پر بھارتی حکومت نے متعدد جعلی مقدمات قائم کررکھے تھےہردیپ سنگھ نجر کو خالصتان کی تحریک سے دستبردار ہونے کیلئے بھارتی سفارت خانے کی جانب سے نتائج بھگتنے کی دھمکیاں بھی مل رہی تھیں
سکھ فار جسٹس نے ہردیپ سنگھ کے قتل میں مطلوب بھارتی سفارت کاروں کے وانٹڈ پوسٹر بھی جاری کئے, گرپتونت سنگھ پنوں کا کہنا ہے قتل کے حوالے سے بھارت کے ملوث ہونے کا ہمارا دعویٰ سچا ثابت ہوگیا ہے، را اہلکاروں کے قتل میں ملوث ہونے کی سازش دنیا بھر میں بے نقاب ہوگئی ہے، شہید ہردیپ سنگھ نجر ریفرنڈم 29 اکتوبر کو سرے بی سی میں منعقد ہوگا

You might also like
Leave A Reply

Your email address will not be published.